وزیر آباد کے سول ہسپتال میں علاج کیلئے لایا گیا سعودیہ پلٹ نوجوان مبینہ طور پر غلط انجیکشن لگنے سے جان کی بازی ہار گیا۔

وزیرآباد کے محلہ کانوانوالہ کے رہائشی سعودی عرب سے آئے 26 سالہ نوجوان دانیال حسن ولد قیصر رضا کو ڈائیریا کے مرض میں مبتلا ہونے پر ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر نے مریض کو مبینہ طو پر مقدار سے زیادہ انجیکشن لگا دیا جس سے مریض کی حالت اچانک بگڑ گئی ،،جو تمام تر کوششوں کے باوجود سنبھل نہ سکی یوں ڈائیریا کے مرض میں ہسپتال لایا گیا مریض چند منٹوں میں ہی موت کے منہ میں چلا گیا۔

ورثا کے مطابق ڈیوٹی پر موجود ینگ ڈاکٹر کو اس بات کا ادراک ہو گیا تھا کہ اس نے مریض کو غلط انجیکشن لگا دیا ہے یہی وجہ ہے کہ وہ مریض کی حالت دیکھتے ہی موقعے سے غائب ہو گیا۔ مریض کی موت کی تصدیق ہوتے ہی ورثا نے غفلت کے مرتکب ڈاکٹر کیخلاف احتجاج کیا اور کہا کہ سرکاری ہسپتالوں میں ناتجربہ کار ینگ ڈاکٹرز غلط تجربوں کے ذریعے انسانی جانوں کیساتھ کھیلنے میں مصروف ہیں.

ہسپتال میں ڈاکٹر کے خلاف شدید احتجاج کی صورت میں مقامی پولیس نے ڈاکٹر کو ریسکیو کرتے ہوئے بحفاظت تھانہ سٹی میں پہنچا دیا،، ورثا نے وزیراعلی پنجاب سے واقعہ کی تحقیقات کروانے اور ذمہ داروں کو سزا دلوانے کا مطالبہ کیا ہے

No Comments

Post A Comment

Verified by MonsterInsights