حکومتی عدم استحکام اور ضلعی انتظامیہ کی فرائض سے غفلت وعدم دلچسپی اور لاپرواہی کے باعث مہنگائی کے طوفان نے غریب عوام کی زندگی اجیرن بنا دی

گوجرانوالہ میں پھل، سبزی، گوشت، آٹا ،دودھ اور دیگر اشیائے خورد و نوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں۔ شہر بھر میں غیر معیاری اور ملاوٹ شدہ دودھ 200 سو روپے کلو میں فروخت ہونے لگا۔ ان حالات میں غریب طبقہ ہر روز بھوک کے ہاتھوں مرنے لگا۔
دوسری جانب گوجرانوالہ میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے قیمتوں کی نگرانی اور استحکام کے لیے بنائی گئی پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے اقدامات ٹھس ہو کر رہ گئے ہیں ،،اور عوام کا کوئی پرسان حال نہیں۔
محنت کش اور تنخواہ دار طبقے نے حکومتی ٹولے سے مہنگائی کے اس عذاب سے نجات دلانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

No Comments

Post A Comment

Verified by MonsterInsights